Code : 521 16 Hit

امام موسٰی کاظم علیہ السلام کے اخلاق کی ایک جھلک

امام موسٰی کاظم علیہ السلام نے فرمایا:’’یہ شخص اللہ کا بندہ اور میرا بھائی اور خدا کی زمین پر میرا ہمسایہ ہے اور میرا و اس کا باپ ایک ہے(حضرت آدم(ع) اور وہ ایک بہترین باپ ہیں اور دین اسلام نے بھی ہمیں ایک دوسری کی مدد اور تعاون کرنے کی دعوت دی ہے۔

ولایت پورٹل: ایک دن ہمارے اور آپ کے ساتویں امام حضرت موسٰی کاظم علیہ السلام ایک راستہ سے گذر رہے تھے تو راستہ میں آپ کی نظر ایک خاک آلود، پریشان حال اور درماندہ شخص پر پڑی جو ایک کنارے اداس بیٹھا ہوا تھا امام علیہ السلام نے اسے سلام کیا اور اس کے پاس جاکر بیٹھ گئے اور کافی دیر تک گفتگو کرتے رہے۔
جب آپ اس کے پاس سے اٹھ کر جانے لگے تو فرمایا:’’اے بھائی اگر کوئی کام ہو تو بتاؤ میں خدمت لئے حاضر ہوں‘‘۔
امام کاظم علیہ السلام کے ساتھیوں میں سے ایک نے کہا:’’مولا! یہ بات تو بڑی عجیب ہے کہ آپ ایک خاک آلود اور درماندہ شخص کے پاس آکر بیٹھ گئے اور اب اس کی خدمت کرنے کا تقاضہ بھی کررہے ہیں؟ حقیقت میں اسے تو آپ کی خدمت کرنی چاہیئے‘‘۔
امام موسٰی کاظم علیہ السلام نے فرمایا:’’یہ شخص اللہ کا بندہ اور میرا بھائی اور خدا کی زمین پر میرا ہمسایہ ہے اور میرا و اس کا باپ ایک ہے(حضرت آدم(ع) اور وہ ایک بہترین باپ ہیں اور دین اسلام نے بھی ہمیں ایک دوسری کی مدد اور تعاون کرنے کی دعوت دی ہے۔
منبع:
اعيان الشيعه، ج 2، ص 7۔

 



0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम