Code : 479 1 Hit

اللہ کے علاوہ ہر چیز فنا ہوجائے گی: آیت اللہ بہجت(رح)

یہ بھی حقیقت ہے کہ ہمارا سب سے بڑا آسرا اور ٹھکانہ خود اللہ تبارک و تعالٰی کی ذات ہے چونکہ غیر اللہ کی تو کوئی اوقات ہی نہیں کہ وہ ہمیں اللہ کے نازل کردہ عذاب سے بچا سکے۔

ولایت پورٹل: قارئین کرام! اپنے زمانے کے معروف عالم و عارف حضرت آیت اللہ العظمٰی بہجت(رح) نے جوانوں کو نصیحت کرتے ہوئے فرمایا تھا:’’نہ ہمارے پاس صاحبان ایمان جیسا حقیقی ایمان ہے اور نہ اہل یقین جیسا یقین۔اب ہم کیا کریں؟ کیا اپنے کو یہ کہہ کر قانع کرلیں کہ(نعوذ باللہ) کل قیامت میں جانوروں کی طرح ہم سے بھی حساب کتاب نہیں لیا جائے گا یا پھر اپنے لئے اللہ کے عذاب سے بچنے کے لئے کوئی محفوظ پناہ گاہ اور ٹھکانہ ڈھونڈھ لیں۔جبکہ یہ بھی حقیقت ہے کہ ہمارا سب سے بڑا آسرا اور ٹھکانہ خود اللہ تبارک و تعالٰی کی ذات ہے چونکہ غیر اللہ کی تو کوئی اوقات ہی نہیں کہ وہ ہمیں اللہ کے نازل کردہ عذاب سے بچا سکے۔
جیسا کہ جناب نوح(ع) کے بیٹے نے الہی عذاب سے بچنے کے لئے غیر خدا(پہاڑی) کو اپنا ٹھکانہ اور پناگاہ بنایا:’’ سَآوي إِلى  جَبَلٍ يَعْصِمُني  مِنَ الْماء‘‘۔(هود: ۴۳) میں پہاڑی پر پناہ لے لوں گا وہ مجھے غرق ہونے سے بچا لے گی۔لیکن وہ پہاڑی مکمل طور پر غرق ہوگئی اس طرح کہ اس کا کوئی اثر باقی نہ بچا۔
پس کل اللہ کے علاہ سب چیزیں فنا ہوجائیں گی:’’ وَ اللهُ خَیرٌ وَأَبْقَی‘‘۔(طه: ۷۳) صرف خدا ہی خیر اور باقی رہنے والی ذات ہے۔


منبع:در محضر بهجت، ج۲، ص

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम