Code : 1221 13 Hit

افغانی شہریوں کو اتنا دہشتگرد نہیں مارتے جتنا امریکی فوج مار دیتی ہے:اقوام متحدہ کی رپورٹ

اقوام متحدہ نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ 2019ء کے ابتدائی 3 ماہ میں امریکی اور افغان فورسز کے ہاتھوں 305 شہری ہلاک ہوئے جبکہ اس دوران دہشتگردوں کے ہاتھوں 227 شہری ہلاک ہوئے۔

ولایت پورٹل:اقوام متحدہ کی سہ ماہی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ 2019ء کے ابتدائی 3 ماہ میں امریکی اور افغان فورسز کے ہاتھوں 305 شہری ہلاک ہوئے جبکہ اس دوران عسکریت پسند گروپ کے ہاتھوں 227 شہری ہلاک ہوئے،افغانستان میں پہلی دفعہ طالبان اور دیگر عسکریت پسند گروپوں کے مقابلے میں امریکی اور افغان فورسزکے ہاتھوں شہریوں کی سب سے زیادہ ہلاکتیں ہوئیں،امریکی اور افغان فورسز کے ہاتھوں ہونے والی شہریوں کی ہلاکتیں بمباریوں یا سرچ آپریشن کے دوران ہوئیں،افغانستان میں مجموعی طور پر شہریوں کی اموات میں کمی آئی ہے لیکن ملکی و غیر ملکی فورسز کے ہاتھوں شہریوں کی ہلاکتوں پر تشویش برقرار ہے،واضح رہے کہ افغانستان میں یکم جنوری سے31 مارچ تک581 شہری ہلاک اور 1192 زخمی ہوئے،جن میں 150 بچے بھی شامل ہیں۔
تسنیم


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम