Code : 771 10 Hit

افغانستان میں غیرملکی افواج کا دہشتگردوں کے بجائے افغان سکیورٹی دستوں پر حملہ؛8اہلکار ہلاک

افغانستان کے صوبۂ غزنی کےسرحدی علاقے''جاغوری'' میں غیرملکی افواج نے حملہ کرکے افغان فوج کے 8اہلکاروں کو ہلاک اور 4کو شدید زخمی کردیا ہے۔

ولایت پورٹل:غزنی صوبائی کونسل کے سربراہ «نصیر احمد فقیری» کا کہنا ہے کہ سرحدی علاقے''جاغوری'' میں غیرملکی افواج نے حملہ کرکے افغان فوج کے 8اہلکاروں کو ہلاک اور 4کو شدید زخمی کردیا ہے،انہوں نے کہا کہ اس قسم کے حملوں کی مختلف وجوہات ہوسکتی ہیں ان میں سے ایک یہ ہے کہ غیرملکی بغیر تحقیق کے حملے کرتے ہیں،فقیری نے مزید کہا کہ امریکی اتحادی اس سے قبل بھی اس قسم کے کئی حملے کرچکے ہیں جس میں افغان فوج سمیت متعدد عام شہری جاں بحق ہوئے ہیں،افغان ذرائع کا کہنا ہے کہ افغانستان میں سال 2019 کے پہلے مہینے میں خانہ جنگی اور غیرملکی افواج کے حملوں میں 1000 شہری ہلاک اور 800 زخمی ہوگئے،جنوری کے مہینے میں کل 131 حملے ہوئے جس کے نتیجے میں 131 افراد ہلاک اور 800 سے زائد زخمی ہوگئے،گزشتہ سال دسمبر کے مہینے میں 140 حملے کئے گئے تھے جس میں 1ہزار121 افراد ہلاک اور475 زخمی ہوئے تھے،افغانستان کے 29 صوبوں میں حملے کئے گئے جن میں صوبہ نورستان، بامیان، ڈایکنڈی، پکتیا اور پنجشیر سرفہرست بتائے جاتے ہیں،خیال رہے کہ افغانستان میں سال 2017 میں25 ہزار اور 2018 میں 27ہزار افغان شہری ہلاک یا زخمی ہوئے تھے،ایک اندازے کے مطابق ہرماہ افغانستان میں 2ہزار149 افراد ہلاک یا زخمی ہوجاتے ہیں یعنی روزانہ 72 افراد لقمہ اجل بن جاتے ہیں۔
تسنیم


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम